dadyal, Dadyal Online
Published On: Thu, Jan 5th, 2012

PPP Dadyal, Celebrates the 83rd Birthday of Zulfiqar Ali Bhotto

Afsar Shahid and PPP Dadyal Celebrates the 83rd Birthday of Zulfiqar Bhutto


Dadyal: Government Minister Ch Afsar Shahid, Khawaja Muhammad Nazir, Waqar kiyani, sahafiq Ratvi Advocate, Sajid Gujjar and Waqar Advocate speaking to audience in a ceremony held in dadyal in memory of Zulfiqar Ali bhutto on his date of birth. A cake was also cut by PP members on his 83rd Birthday.

وزیر اوقاف ،زکوٰۃ، اموردینیہ چوہدری محمد افسر شاہد نے کہا ہے کہ کشمیر کی آزادی ہمارا نصب العین ہے انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کو دنیا کے سامنے اجاگر کرنے کیلئے بھرپور کردار ادا کر رہی ہے اس موقع پر انہوں نے کہا کہ شہید ذوالفقا ر علی بھٹو کشمیر ی قوم کے لیے ایک عظیم عوامی لیڈر تھے کشمیر کی آ زادی کے لیے ہم ایک ہزار سال تک جنگ لڑیں گے ہم آ زاد خطہ کو عظیم قائد کے نقش قدم پر چلتے ہوئے ایک رول ماڈل بنائیں پیپلزپارٹی ایک عوامی جماعت اس کی واضع مثال ہے کہ اس جماعت کے قائدین نے عوامی حقو ق کے لیے اپنی جانوں کا نظرانہ پیش کیا ان خیالات کا اظہار انہوں نے شہید ذولفقار علی بھٹو کی 83ویں سالگرہ اور یوم حق خود رادیت کے سلسلے میں پیپلز سیکرٹریٹ ڈڈیال میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا تقریب سے وقار اسلم کیانی، ڈویژنل صدر پاکستان پیپلز پارٹی خواجہ محمد نزیر، شفیق احمد رٹوی ایڈووکیٹ، پی وائے او کے رہنماء ساجد گجر،اور وقار ایڈووکیٹ،اور دیگر نے بھی خطاب کیا اس موقع پر پیپلز پارٹی کے رہنماؤں کی ایک بڑی تعداد نے تقریب میں شرکت کی انہوں نے کہا کہ پاکستان کا موجودہ جمہوری نظام بھٹو شہید کے خاندان کی مر ہون منت ہے عظیم قائد کی عظیم بیٹی نے اپنی جان کی قر بانی دے کر یہ ثابت کیا کہ وہ ایک عوامی رہنما ہیں انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی آزادی تک ہم اپنے کشمیری بھائیوں کو تنہا نہیں چھوڑیں گے ذولفقار علی بھٹو کی کشمیر کے حوالے سے جو خدمات ہیں تاریخ ان کی گواہی خو د دیتی ہے پوری پاکستانی قوم کو اس بات پر فخر ہے کہ پیپلز پارٹی ہی وہ واحد جماعت ہے جو وفاق کی علامت ہے ہمیں یہ اعزاز حاصل ہے کہ ہمیں ایک ہی وقت میں پاکستان اور آزاد کشمیر میں حکومت کرنے کا موقع ملا ہے اور یہ ہمارے لیے ایک بڑا امتحان بھی ہے ہم اس امتحان میں اسی صورت کامیاب ہو سکتے ہیں جب ہم یک جان ہو کر چکیں گے پاکستان ہماری پناہ گاہ ہے اگر پاکستان رہے گا تو ہمارا وجود بھی برقرار رہے گا پاکستان کی سلامتی کے بغیر ہماری کوئی شناخت نہیں ہے یہ خطہ بد قسمتی سے اس وقت عالمی سازشوں کا شکار ہے ہم ایسے حالات سے متحد ہو کر نکل سکتے ہیں پاکستان میں اتنی قوت موجود ہے کہ وہ اس بحران سے نکل سکتا ہے انہوں نے کہا کہ ہماری بنیادی ذمہ داری یہ ہے کہ ہم انصاف کے تقاضوں کو پورا کریں اور ہر عام آدمی تک انساف کی فراہمی کو یقینی بنائیں انہوں نے کہا کہ سیاسی کارکن کی احثیت سے یہ میری ذمہ داری ہے کہ ڈڈیال کے لوگوں کو میں یہ پیغام دوں کہ یہ ریاست ان کا بنیادی گھر ہے اس سلسلے میں میں نے یونین کونسل سطح پر کمیٹیاں قائم کر دی ہیں جو اپنے علاقوں کے مسائل کے حوالے سے مجھے آگاہ کرتے رہیں گے لوگوں کو پاور دینے کا مقصد یہ ہے کہوہ خود بتائیں کہ ان کے ادارے کیسے چل رہے ہیں اگر تبدیلی دیکھنی ہے جس کا ہم نے خواب بھی دیکھا ہے تو معاشرے کو برادری ،پارٹی ،رشتے سے بالا تر ہو کر کام کرنا ہو گا قانون سب کیلئے برابر ہے اوپر سے نیچے تک خرابیاں موجود ہیں بلیک میلنگ والے معاشرے اور کلچر کو ختم کرنا ہو گا ہم ڈڈیال کو روول ماڈل بنانا چاہتے ہیں ہمیں بحثیت سیاسی کارکن اپنا قبلہ درست کرنا ہو گا اداروں کا قبلہ میں خود درست کر دوں گا۔

Displaying 1 Comments
Have Your Say
  1. Akram Sattar says:

    cake looks nice, enjoy it…

Leave a comment

XHTML: You can use these html tags: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>