dadyal, Dadyal Online
Published On: Tue, Feb 21st, 2012

Loadshedding and Dadyal jaloos..!

لوڈ شیڈنگ کے خلاف نکالے گئے جلوس کی جھلکیاں
دوکانیں صبح سیورے ہی بند
موسم آبر آلود ہونے کے باوجود لوگوں کی بڑی تعداد جلوس میں شامل ہونے کے لیے صبح ہی تیار ،
لوگ گروپوں کی شکل میں مختلف مقامات پر جلوس میں شامل ہوتے رہے،
بھلوٹ چوک سے ایک بڑا جلوس جنرل سیکرٹری صادق بٹ کی قیادت میں آیا،
آڑہ جٹاں سے جلوس سابق ایڈمنسٹریٹر چوہدری آفتاب ،جاوید انصاری و دیگر کی قیادت میں اشفاق شہید چوک پہنچا،
سیکٹر 3 سے سابق صدر انجمن تاجراں انور لطیف ڈار،صدر پریس کلب عاصم شریف لون سمیت دیگر کی قیادت میں پہنچا،
چونگی نمبر 1 سے ایک بڑا جلوس انجمن تاجراں حاجی خلیل ،ریاض راجو و ،رانا اورنگزیب و دیگر کی قیادت میں پہنچا،
بوائز ڈگری کالج ڈڈیا ل سے طلباء تنظیموں کی قیادت میں بھی جلوس مقررہ جگہ پر پہنچا،
تمام جلوس جب اشفاق شہید چوک( ون وے ٹریفک، نرد پرانا سرکاری ہسپتال) پہنچے تو ایک بڑے جلسے کی شکل اختیار کرگئے،
شرکائے نے اپنے مطالبات کی منظوری تک دھرنا دیے رکھا اور اس دوران شدید نعرے بازی بھی ہوتی رہی،
انتظامیہ فوری طور پر دھرنے کی جگہ پہنچ گئی ،جس میں اسسٹنٹ کمشنر کاشف حسین،ڈی ایس پی راجہ کرامت اللہ، انسپکٹر عبدالخالق و دیگر شامل تھے،
انتظامیہ ڈڈیال نے مذاکرات کی کوشش کی تو دو مرتبہ مذاکرات ناکام ہوئے، عوام علاقہ کا ایک ہی مطالبہ تھا کہ بجلی کی طویل لوڈ شیڈنگ کو فوری طور پر ختم کیا جائے اور ڈڈیال گریڈ اسٹیشن کوچکسواری گریڈ اسٹیشن سے منسلک کیا جائے۔محکمہ برقیات و واپڈا کے افسران سے بات چیت کریں گے۔
ایس ڈیم کاشف نے کہاکہ ایس ای اور ایکسین میرے دفتر میں بیٹھے ہیں آپ میں سے کچھ راہنما میرے ساتھ چلیں،
اس پر مظاہرین شدید غصے میں آگئے جس کی وجہ سے ایس ای برقیات اور ایکسین برقیات کو دھرنے والی جگہ پر آنے پر مجبور کردیا،
ایس ای اور ایکسین کے آتے ہی مظاہرین نے شدید نعرے بازی کی اور کہاکہ ہم کسی بات پر یقین نہیں رکھتے ہمیں تحریری طورپر ثبوت دیا جائے،
انجمن تاجراں کے نمائندوں نے آفس جا کر ایس ای سے لوڈشیڈنگ کا شیڈول لکھوایا،
ڈڈیال شہر میں پہیہ جام ہڑتال کی وجہ سے وزیر اعظم آزاد کشمیر کو پلاک پل پر ایک گھنٹہ سے زائد انتظار کرنا پڑا،

Leave a comment

XHTML: You can use these html tags: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>